فقہ السنّہ (فہمِ سنّت)

حلقہ (۵)

پانچویں حدیث

برتن میں کتّے کے منہ ڈالنے کیوجہ سے اس کے دھونے کا بیان

 

ابو ہریرہ – رضی اللہ عنہ – سے روایت ہے کہ اللہ کے رسول – صلی اللہ علیہ وسلم – نے ارشاد فرمایا : (إذا شرب الكلب في إناء أحدكم فليغسله سبعاً)

" جب کتّا تم میں سے کسی کے برتن میں سے (کچھ) پی لے تو اس برتن کو سات مرتبہ دہونا چاہئے "۔

 مسلم کی  ایک روایت میں ہے : (أولاهن بالتراب)"  کہ پہلی بار مٹی سے صاف کرو"۔  مسلم میں ہی عبد اللہ بن مغفل سے روایت ہے کہ اللہ کے رسول – صلی اللہ علیہ وسلم – نے فرمایا : (إذا ولغ الكلب في الإناء فاغسلوه سبعاً وعفروه الثامنة بالتراب)

’’  جب کتّا  برتن میں منہ ڈال دے تو اس کو سات بار دھلو، اور ا ٓٹھویں بار مٹّی سے  رگڑ کر صاف کرو ‘‘ ۔  اور مسلم میں ایک لفظ  : (فليريقه)، ہے" یعنی اسے بہادے"۔

اور ترمذی کی ایک روایت میں : (أخراهن، أو أولاهن بالتراب). "  یعنی پہلی  یا  آ خری  بار مٹی سے دھلا جائے "۔

یہ بہت  اہم حدیث ہے ،  اس میں کتے کے چھونے  ، اور  اس کے (برتن) میں منہ ڈالنے  ، سے متعلق طہارت حاصل کرنے کے بارے میں کافی اہم مسائل پر مشتمل ہے ، درج ذیل" وقفات " میں  ہم اسے پیش کر رہے ہیں :

پہلا وقفہ :

 آ پ کا قول : (إذاولغ): ولوغ  سے مراد یہ ہے کہ: "جب کتا  اپنے زبان کے کنارے سے پی لے" ۔

کچھ لوگوں نے کہا ہے کہ :" جب وہ  اپنے زبان کو پانی اور دیگر سائل(مائع) چیز میں  ڈال دے ،اور اس کو ہلا دے ، چاہے اس نے پانی پیا ہو یا نہ پیا ہو"  ۔

اور یہ بھی کہا  گیا ہے  کہ : " جب برتن میں غیر سائل  چیز ہو تو اس کو(لعاق) "  زبان سے چاٹنا " کہا جاتا ہے،  اور جب برتن خالی ہو تو اس کے لئے ( لحاس) " زبان سے چاٹنے"   کا لفظ استعمال کیا جاتا ہے" ۔

اور یہاں پر تمام چیزوں کے لئے حکم عام ہے ، چاہے برتن خالی ہو یا بھرا ہوا ہو ،  یا اس میں کوئی سائل چیز ہو جیسے : پانی وغیرہ ،  جیسا کہ کچھ اہل علم نے اس کو ذکر کیا ہے ۔

دوسرا وقفہ:

ا ٓ پ کا قول : (في إناء أحدكم):  یہاں پر اضافت کا کوئی فائدہ نہیں (ملغی )ہے ، کیو نکہ طہارت اور نجاست کا حکم برتن کے ملکیت پر موقوف نہیں ہے ۔  اور اسی طرح  آپ کےقول : (فليغسله) میں،یہ ضروری نہیں کہ ہے کہ دھونے والا اس برتن کا مالک ہو ۔

تیسرا وقفہ:

ا ٓپ کا قول : (فليرقه) " یعنی اس برتن میں جو کچھ ہے اس کو پھینک دو یا بہا دو"۔    

چو تھا وقفہ:

اس حدیث سے  جمہور اہل علم نے  " کتے کی نجاست " پر استدلال کیا ہے ،  چاہے اس کے منہ کی نجاست ہو یا اس کے پورے جسم کی ۔

ان لوگوں کا کہنا ہے کہ: اس کے منہ کی نجاست  اللہ کے رسول ­– صلی اللہ علیہ وسلم – کے اس فرمان:" کتا جس برتن میں منہ ڈال دے  ، تو اس کو دھویا جائے گا" سے لیا گیا ہے ، کیو نکہ غسل صرف " نجاست " یا " حدث" کیو جہ  سے کی جاتی ہے ، اور اس حدیث میں " حدث" کا ذ کر ہی نہیں  آیا ہے ، لہذا " نجاست " کی تعین ہو گئی ۔

پھر یہ کہ  اللہ کے رسول‑ صلی اللہ علیہ وسلم ‑  نے (اس) پانی کو بہانے کا حکم دیا ہے ، اور ظاہر  ہے پانی کو  (بغیر  کسی عذر) کے بہانے میں  مال کا ضیاع  ہے ،  اگر (وہ) پانی طاہر ہوتا   تو    ا ٓپ اس کو ضائع کرنے کا حکم نہیں دیتے ، لہذا بہائے گئے پانی کی نجاست سے کتُے کے منہ کی نجاست کا    دلیل ملتا ہے ۔  

 جہاں  تک رہی بات  اس کے تما م جسم کے نجس ( ناپاک) ہونے کی  تو  اس کے منہ کی نجاست پر قیاس کر کے  اس کے پورے جسم کو نجس (ناپاک) مانا گیا ہے ۔ کیونکہ  اس کا منہ  اس کے تمام اعضاء میں  سب سے زیادہ  اشرف اور مکرم ہے ، تو اس کے بدن کے  بقیہ اعضاء تو بدرجۂ اولی  نجس ہو ں گے۔

اسی طرح سے جب اس کے لُعاب  کی نجاست کی تعیین ہو گئی ، اور لُعاب کہتے ہیں :  اس کے منہ کی تھوک ، یا (رال ) کو ، اور عرق جسم سے نکلنے والا ایک حصہ ہے ، تو ا س کے تمام پسینے ناپاک ہوئے،اور پورے بدن ناپاک ٹہرے۔

پانچواں وقفہ:

کیا یہ نجاست  کسی معین کتُے کے لئے خاص ہے ، یا  تما م کتُوں کے لئے عام ہے ؟

اما م مالک – رحمہ اللہ – کہتے ہیں کہ : یہ حکم خاص ہے ان کتُوں کے لئے  جن کا پالنا منع ہے ، جہاں تک رہی بات  ان کتُوں کی ، جن کو پالنے کی اجازت یا  رُخصت ہے جیسے: شکاری کتا ، کھیتی اور جانوروں کی نگرانی اور دیکھ  بھال کرنے  والا  کتُا   وغیرہ ،  تو یہ حکم ان کے لئے عام نہیں ہے ،  لیکن صحیح بات وہی  ہے  جو جمہور اہل علم کا مذہب ہے ،  ان کے نزدیک یہ حکم تمام کتُوں کے لئے عام ہے ،  جہا ں تک رہی بات ان کتُّوں کی جن کے بارے میں رُخصت دی گئی ہے ، تو  وہاں رُخصت  بطور حاجت وضرورت کےلئے ہے ۔

چھٹا وقفہ:

اس حدیث سے جمہور اہل علم نے استدلال کیاہے کہ  وہ برتن جس میں کتُا منہ ڈال دے ، تو وہ نجس ہو جاتا ہے ، اور اسی طرح اس برتن میں موجود تمام چیزیں  ‑ پانی  وغیرہ – نجس ہو جاتی ہیں ، کیونکہ اللہ کے رسول – صلی اللہ علیہ وسلم – نے  برتن کو "سات بار"  دھونے کا حکم دیا ہے اور "  آ ٹھویں بار"  مٹی سے دھونے کا حکم دیا ہے ،  اور دھونے کا  حکم صرف " حدث " یا "نجاست " کے لئے ہے ، جیسا کہ انھوں نے (جمہور علماء) نے امام مسلم  کی مرفوعا  روایت کردہ حدیث  : (طهور إناء أحدكم...)سے استدلال کیا ہے ،  اور طہارت  کے لئے شرط ہے کہ نجاست کے بعد ہو۔

ساتواں وقفہ:

دھونے کی تعداد کے سلسلے میں متعدد حدیثیں وارد ہو ئی  ہیں  ، ان میں سے کچھ روایتیں درج ذیل ہیں :

۱۔ پہلی روایت : (فليغسله سبعاً أولاهن بالتراب)  " اس کو سات مرتبہ دھلو ، اور پہلی  بار  مٹی سے صاف کرو"۔

۲۔ دوسری روایت : (فاغسلوه سبعاً وعفروه بالتراب)"  اس کو سات بار دھلو ، اور (ایک بار ) مٹی سے مانجھ کر صاف  کرو "۔

 حدیث کی  صحت  اور متعدد روایتوں  کیوجہ سے اہل علم نے یہ استنباط کیا ہے کہ" سات مرتبہ " دھونا واجب ہے ،   جب کہ کچھ اہل علم نے اس کی مخالفت کر تے ہوئے  صرف "ایک بار"  دھونے کو واجب کہا ہے ۔

آ ٹھواں وقفہ:

اس حدیث سے جمہور اہل علم نے یہ استنباط کیا ہے کہ برتن کو "ایک مرتبہ " مٹی سے دھو نا واجب ہے ، کیونکہ  آ پ – صلی اللہ علیہ وسلم – کا فرمان ہے : (أولاهن بالتراب)" کہ پہلی بار مٹی سے دھلو "۔ ایک روایت میں ہے کہ : (وعفروه الثامنة بالتراب)

"   آٹھویں بار مٹی سے مانجھ کر صاف کرو " ۔  ایک روایت میں ہے کہ : (إحداهن بالتراب)"  کہ پہلی بار مٹی سے دھلو"۔

لیکن سوال پیدا ہوتا ہے کہ آ      خر        اس دھونے کی جگہ کون سی ہوگی ؟  یعنی  کیا مٹی سے" پہلی بار"  دھویا جائے گا یا   اخیر میں؟۔

راجح بات :  اس سلسلے میں راجح بات یہ ہے کہ" پہلی بار "ہی اس جگہ کو مٹی سے دھویا جائے گا ، اور" سات مرتبہ  "پانی سے  دھویا  جائے گا، ( واللہ اعلم )۔

نواں وقفہ:

کیا مٹی کے علاوہ دوسری اور چیزوں جیسے: صابن ، اشنان  وغیرہ   صفائی اور  نظافت میں کفایت کریں گے؟۔

جواب:  علماء نے کہا ہے کہ کوئی  اور دوسری چیز  کفایت نہیں کرے گی، کیو نکہ کتُے کے منہ میں ایک ایسا مادہ  پایا جاتا ہے  جس کو صرف مٹی ہی زائل کر سکتی ہے ،  اس میں اللہ تعالی کی بے انتہا حکمت پوشیدہ ہے ۔ اگرچہ بعض لوگ یہ گمان کرتے ہیں کہ  اس سے غلط فہم ہے ،  بلکہ مٹی سے ہی دھلنا ضروری ہے ، اور اگر دیگرمنظّفات کو ملا لے تو کوئی حرج نہیں۔

دسواں وقفہ:

کچھ اہل علم نےذکر کیا ہے  کہ اگر کتا  اپنے ہاتھ یا پَیر کو کسی برتن میں داخل کر دے ، تو اس کا حکم ولوغ پر قیاس کرتے ہوئے اور تمام کتوں کے نجس ہونے  کو بنیاد بناتے  ہوئے   عام ہوگا ،اور وہ مادہ جو اس کے لُعاب (رال) میں ہوتا ہے ،  وہ اس کے عرق  میں موجود  رہ کر  اس کے جسم میں گردش  کرتا رہتا ہے۔

جبکہ کچھ لوگوں نے کہا ہے کہ : "یہ حکم صرف  کتُے کے منہ ڈالنے کے ساتھ خاص ہے "۔  

 پہلی بات زیادہ  مناسب ہے ۔ واللہ اعلم ۔

گیارہواں وقفہ:

کیا دوسرے اور حیوانوں کو کتُے پر قیا س کی جاسکتا  ہے ؟

جمہور اہل علم کے نزدیک درست بات یہ ہے کہ کتُوں پر کسی اور کو نہیں قیاس کیا جاسکتا ہے ، ۔واللہ اعلم۔کیونکہ اس  سلسلے میں خاص نص  وارد  ہے ،  گر چہ  دوسرے اور  نجس جانور  ہیں جیسے : خنزیر ،  وغیرہ ،  لیکن منہ ڈالنے کی وجہ سے برتن  کے دھونے کے  بارے میں کُتّے پر قیاس نہیں کیا جائے گا۔

         

 

                                                                                

التعليقات  

#73 Как вернуть деньги от брокера-мошенника: помогают ли чарджбэк-компании?MichaelChogy 2022-09-29 09:40
Чарджбэк — это возвратный платеж. В процедуре принимает участие банк-эмитент (банк, выпустивший карту) и банк-эквайер (банк получателя).
Как вернуть деньги: https://www.rabota-zarabotok.ru
Смотрите по ссылке - https://www.rabota-zarabotok.ru/
Инициировать процедуру можно, обратившись в банк. Заранее необходимо подготовить доказательство того, что платеж действительно был несанкционированный и деньги списаны по ошибке, либо путем обмана.
Как вернуть деньги от брокера-мошенника: помогают ли чарджбэк-компании?: http://nusmax.ru/index.php/synthesia/contentall-comcontent-views/category-list/pachelbell-canon-in-d 12b7dcb
اقتباس
#72 Ремонт 2х комнатной квартиры: нюансы и тонкостиClementLic 2022-09-01 23:11
Если это будет косметический ремонт, то его можно произвести своими силами, с помощью друзей, знакомых или с привлечением одного частника – специалиста.
Источник - https://www.business-gazeta.ru/article/353332
В случае с капитальным ремонтом без переезда уже не обойтись. Он потребует привлечения профессиональных специалистов, возможно дополнительных согласований на перепланировку, отключения отопления
Ремонт 2х комнатной квартиры: нюансы и тонкости: https://www.noahguitars.com/2017/10/03/premier-guitar-ben-harper-presents-his-noah-lap-steel-during-rig-rundown/#comment-415842 7dcb6_f
اقتباس
#71 Все, что может потребоваться для обустройства бассейнаFrankret 2022-08-31 17:55
https://bobr.by/news/press-releases/176934: https://bobr.by/news/press-releases/176934
https://bobr.by/news/press-releases/176934
اقتباس
#70 Широкий выбор купелей для баниAnthonyWax 2022-08-31 13:53
http://www.belgazeta.by/ru/press_release/economicsn/41687/: http://www.belgazeta.by/ru/press_release/economicsn/41687/
http://www.belgazeta.by/ru/press_release/economicsn/41687/
اقتباس
#69 Как выбрать надувной бассейн для дачи?Stephandok 2022-08-31 10:07
бассейны где купить
: https://tvoi54.ru/articles/13-04-2020/4616-kak-vybrat-naduvnoi-bassein-dlja-dachi.html
https://tvoi54.ru/articles/13-04-2020/4616-kak-vybrat-naduvnoi-bassein-dlja-dachi.html
اقتباس
#68 Влияние наркотиков на организмAlberiNaxia 2022-08-30 21:46
Влияние наркотиков на организм до сих пор изучается врачами и учеными. Одно можно сказать в любом случае – речь идет о негативном. Однако из-за низкого уровня информативности и осознанности, проблема продолжает распространятся. Наркотические вещества пагубно влияют на организм.
Подробнее по ссылке: http://dietaonline.ru/portal/articles/708-kak-narkotiki-vlijajut-na-chelovecheskij-organizm.html на сайте.
Вещества наркотического свойства воздействуют на разные сферы здоровья – физического и психического. Клиника борьбы с наркотической зависимостью доктор Боб помогает решить проблему пациента с помощью современных методик
Влияние наркотиков на организм: http://reno.kiev.ua/t21400-3538/#post1037229016 cb4_f36
اقتباس
#67 Разновидности предоплаченных картAlbertNaxia 2022-08-29 16:58
Несмотря что в наши дни виртуальная предоплаченная карта стала не менее распространенной, нежели другие разновидности платежных карт, все же не все клиенты банков смогли оценить ее по достоинству.
Смотрите по ссылке: https://rb.ru/opinion/sistema-motivacii/
Есть несколько существенных аспектов, делающих ее непохожей на банковские карты. Так, она не имеет привязки к счету в банке, хотя в большинстве случаев ее оформление происходит именно в нем.
Разновидности предоплаченных карт: https://always-be-special.blogger.hu/2014/04/07/vonaton 51b03fa
اقتباس
#66 Дубликаты гос номеровGretorygriff 2022-08-27 11:54
На дороге довольно часто происходят ситуации, после которых владельцу транспорта нужна замена старого номерного знака. Так, есть несколько основных причин такого решения:
изготовление дубликатов номеров: https://gosavtoznak.ru/
Также автомобильный номер может быть просто утерян по причине недостаточно надежного крепления или воздействия погодных условий, например, сильного ливня.
Дубликаты гос номеров: http://imc-simf.lbihost.ru/?p=2961#comment-76286 7078522
اقتباس
#65 Дубликаты гос номеров: условия полученияCharlesdah 2022-08-25 09:49
Если вы водите автомобиль с погнутым, обесцвеченным или пришедшим в негодность номерным знаком, вы можете получить его замену в ГИБДД. Скорее всего, вам придется заплатить пошлину и предъявить доказательство того, что вы являетесь владельцем автомобиля.
https://samsladosti.ru/%d0%b2%d0%be%d0%b6%d0%b4%d0%b5%d0%bd%d0%b8%d0%b5-%d0%b0%d0%b2%d1%82%d0%be%d0%bc%d0%be%d0%b1%d0%b8%d0%bb%d1%8f-%d0%b1%d0%b5%d0%b7-%d0%b3%d0%be%d1%81-%d0%bd%d0%be%d0%bc%d0%b5%d1%80%d0%be%d0%b2/
Если у вас нет номерного знака, вы можете получить его в местном управлении ГИБДД. Вам нужно будет взять с собой регистрационные документы на автомобиль и свидетельство о страховании. За эту услугу обычно взимается плата.
Дубликаты гос номеров: условия получения: https://garderobnie.com/price/products/rels-dlya-stoek-1560/#comment_53715 10c4461
اقتباس
#64 Водительские права: условия полученияMichaelAnins 2022-08-24 13:15
В 2022 году экзамены на получение новых категорий можно сдавать в обычном режиме. Сейчас экзаменационные подразделения работают и в выходные дни. Очереди обычно нет, поэтому сдать экзамен можно, если у вас есть специально выделенное время.
https://0225.ru/raznoe-8/8067-podgotovka-k-dalney-poezdke-na-avtomobile.html
Получить водительские права в России можно несколькими способами. Первый – через русскую автошколу. Эти учреждения обеспечивают всех водителей образовательной программой и экзаменами на получение лицензии.
Водительские права: условия получения: http://printercolortonerchip.mex.tl/?gb=1#top 1b03fa1
اقتباس

أضف تعليق

كود امني
تحديث